141

بھارتی سیٹلائیٹ تصاویر: پاکستانی ڈرون دیکھ کر مودی سرکار کی نیندیں حرام۔

بھارتی دفاعی ماہرین کے مطابق 24نومبر 2017ء کو پاکستان کےایم ایم عالم ہوائی اڈے میانوالی کی سیٹلائٹ تصویروں سے پتہ چلتا ہے کہ پاکستان کے پاس چین کے بنے ہوئے ونگ لونگ ون ڈرون موجود ہیں ، اس قسم کی ایک رپورٹ برڈ کالج امریکہ میں مطالعہ کیلئے پیش کی گئی جس کا تجزیہ کرنے پر پتہ چلا کہ اس کے پر چودہ میٹر سائز کے ہیں ، وی ٹیل ونگ لونگ ون سے ملتی جلتی ہے ، اتنے پروں والا ڈرون دنیا میں اور کہیں نہیں ہے، اس کی رفتار 280 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے اور اس کا رینج 5000 کلومیٹر ہے جبکہ یہ 20 گھنٹے تک کارروائی کرسکتا ہے، یہ ڈرون ہوا سے زمین پر مار کرنے والے 100کلووزنی ہتھیار کے ساتھ پرواز کر سکتا ہے جس میں بم اور میزائل بھی شامل ہیں ، اس ڈرون کو موبائل کے ذریعے کنٹرول کیا جا سکتا ہے اور یہ کسی انسان کے بغیر بھی اڑایا جا سکتا ہے۔

بھارت نے ایک بار پھر الزام لگایا ہے کہ پاکستان کے پاس درمیانے سائز کے فالکو ،شاہپر اور براق ڈرون کا پورا بیڑا موجود ہے۔ سیٹلائٹ کی تصویروں او ر دیگر کئی رپورٹس سے پتہ چلتا ہے کہ پاکستان چین کے تیار کردہ کثیر المقاصد ڈرون ونگ لونگ ون استعمال کررہا ہے جو بھارت کیخلاف جارحانہ کارروائیاں کرسکتے ہیں ۔

ایک اعلیٰ بھارتی فوجی نے اخبار کو بتایا ہے کہ ہم نے اس سے پہلے بھی اس قسم کی رپورٹس ملی تھیں اور اس سلسلے میں ہم ضروری اقدامات کررہے ہیں ،بھارت بھی ڈرونز کا ایک بڑا بیڑا رکھتا ہے جو کہ حملہ کرنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے ۔ یہ ڈرون اسرائیل اور امریکہ سے حاصل کئے گئے، یہ امریکی ڈرون عراق میں بھی استعمال کئے گئے جبکہ افغان پاکستان ریجن میں بھی استعمال کئے گئے ہیں ، بھارت یہ ڈرون نکسل باڑی سے متاثرہ علاقوں میں بھی استعمال کرتا ہے۔
p.p1 {margin: 0.0px 0.0px 0.0px 0.0px; text-align: right; font: 12.0px ‘Helvetica Neue’; color: #454545; min-height: 14.0px}
p.p2 {margin: 0.0px 0.0px 0.0px 0.0px; font: 12.0px ‘.Noto Nastaliq Urdu UI’; color: #454545}
p.p3 {margin: 0.0px 0.0px 0.0px 0.0px; font: 12.0px ‘Helvetica Neue’; color: #454545; min-height: 14.0px}
span.s1 {font: 12.0px ‘Helvetica Neue’}

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں