240

سویڈش وزیراعظم اولف پالمے قتل کیس 34 سال بعد حل ہونے کے قریب ہے، چیف پراسیکیوٹر

اولوف پامے قتل کیس کے انچارج پراسیکیوٹر کا کہنا ہے کہ وہ توقع کرتے ہیں کہ آخر کار وہ اس سال کی پہلی ششماہی کے دوران تحقیقات میں کسی نتیجے پر پہنچ جائیں گے۔

کریسٹر پیٹرزسن نے سویڈش ٹیلی ویژن کے ساتھ ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ وہ پر امید ہیں کہ وہ اس غیرحل شدہ کیس میں جو کچھ ہوا ہے اس کا جواب دینے میں کامیاب ہو جائیں گے جہاں 1986 میں وسطی اسٹاک ہوم میں سوشل ڈیموکریٹ کے وزیر اعظم اولف پالمے کو گولی مار دی گئی تھی۔

پیٹرسن نے ریڈیو سویڈن کو بتایا کہ فیصلہ یا تو اس قتل کے الزام میں کسی پر مقدمہ چلانے کی کوشش کرنا ہے ، یا تحقیقات ختم کرنا ہے۔ انہوں نے وضاحت کی کہ نئی پیشرفتوں کا مجموعہ اور پچھلی معلومات کے تازہ تجزیے نے اس نئی پیشرفت کی راہ ہموار کی ہے، ہمیں جلد اس کیس کو ختم کرنا ہے، ہم ہمیشہ کے لئے اسے جاری نہیں رکھ سکتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

سویڈش وزیراعظم اولف پالمے قتل کیس 34 سال بعد حل ہونے کے قریب ہے، چیف پراسیکیوٹر” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں