سویڈن میں کشمیر پر سیمینار

آج مورخہ 7 دسمبر بروز منگل سویڈن کی سب سے بڑی سیاسی جماعت سوشل ڈیموکریٹ کشمیر پر ایک سیمینار کا اہتمام کررہی ہے اس سیمینار کے مرکزی سپیکر مشہور پریزنٹر روبن ووگ مین ہونگے جبکہ اس میں سویڈن کے مشہور پارلیمنٹیرین جناب سرکن کوسے اور برسٹل میں یونیورسٹی آف دی ویسٹ آف انگلینڈ میں سیاسیات اور بین الاقوامی تعلقات کی سینئر لیکچرر ڈاکٹر ایما برین لوند کی تقاریر بھی شامل ہوں گی۔ یہ سیمینار اون لائن ایونٹ کی شکل میں ہوگا اور اس میں سب شرکت کرسکتے ہیں، اس ایونٹ میں شرکت کیلئے شام 6 بجے سویڈش وقت کے مطابق مندرجہ ذیل لنک پر کلک کریں۔

https://fb.me/e/1eqSfc7QL

سوشل ڈیموکریٹ سرکن کوسے ہمیشہ مقبوضہ کشمیر میں انڈین فوج کی طرف سے انسانیت سوز مظالم ڈھائے جانے پر اپنی آواز بلند کرتے رہتے ہیں، انہی کی کوششوں کی وجہ سے مسئلہ کشمیر سویڈش پارلیمنٹ میں ڈسکشن کیلئے بھی منظور ہوچکا ہے۔ آج کے اس اون لائن ایونٹ کو ارینج کرنے میں سٹاک ہوم میں پاکستانی سفیر جناب ڈاکٹر ظہور احمد صاحب اور سویڈن میں موجود پاکستانی کمیونٹی کی چیدہ چیدہ شخصیات کا ہاتھ ہے۔ 

اس ایونٹ کو منعقد کرنے کیلئے سوشل ڈیموکریٹ کے فیس بک پیج پر کشمیر کے تنازعہ کا انٹروڈکشن کچھ ایسے دیا گیا ہے، ہندوستان اور پاکستان کے درمیان منقسم کشمیر کے علاقے میں تنازعہ کئی دہائیوں سے جاری ہے اور 1980 کی دہائی کے اواخر سے خطے کی صورتحال خاصی غیر مستحکم رہی ہے۔ آج، کشمیر دنیا کے سب سے زیادہ عسکری موجودگی والے خطوں میں سے ایک ہے اور حالیہ برسوں میں کئی بنیادی انسانی حقوق کی پابندیوں نے آبادی کو متاثر کیا ہے۔ 70 سال سے زیادہ پرانے اس تنازعے کے پرامن حل کی فوری ضرورت ہے، لیکن مستقبل قریب میں ایسا کوئی حل نظر نہیں آرہا ہے۔ اس تنازعہ کے حل تک پہنچنے کیلئے کیا کیا جائے؟ اور مختلف سویڈش سیاسی جماعتیں کیا چاہتی ہیں؟ سویڈن اور سوشل ڈیموکریٹس کو اس  تنازع میں کیسے کھڑا ہونا چاہیے؟

سیمینار میں خوش آمدید!