بچے کسی بھی قوم کا مستقبل اور بیش قدر سرمایہ ہوتے ہیں

اردونامہ ویب ڈیسک (انصر اقبال بسرا سٹاک ہوم سویڈن) منہاج القرآن انٹرنیشنل ویکو سویڈن کے زیراہتمام ویکو کے مقامی ہوٹل میں بچوں کی تربیت اور والدین کا کردار کے موضوع پر ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس کا باقائدہ آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا تلاوت کلام پاک کے بعد آقا دوجہاں کی شان میں شاہد سرور صاحب نے ہدیہ عقیدت کے پھول نچاور کرکے سما باندھ دیا، پاکستانی کیمونٹی کے اکابرین کا اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ منہاج القرآن نے منفرد ایونٹ کرکے ہمارے دل جیت لیے ہیں۔ ان کہنا تھا کہ ہماری کمیونٹی میں اسطرح کے ایونٹ کی اشد ضرورت تھی جو منہاج القرآن نے بڑھے احسن طریقے سے پوری کردی ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ منہاج القرآن آئندہ بھی ایسے ہی ایونٹ منعقد کرتی رہے گی جو بچوں، نوجوانوں اور بالخصوص والدین کو بچوں کی اسلامی نقطہ نظر سے تربیت کے متعلق سلیبس مہیا کریں گے تاکہ والدین صحیح معنوں میں اپنے بچوں کو اسلام کے مطابق زندگی گزارنے کی تربیت فراہم کرسکیں۔ شرکاء سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے علامہ محمد اویس طاہر صاحب نے فرمایا کہ بچے کسی بھی قوم کا مستقبل اور بیش قدر سرمایہ ہوتے ہیں۔

ان طفلانِ ملّت کے لیے اَعلیٰ تربیت، عمدہ تعلیم، مناسب پرورش، مہذب نگہداشت اور خصوصی دیکھ بھال والدین اور اساتذہ کی اَوّلین ذمہ داری ہوتی ہے۔ حضور نبی اکرم ﷺ نے ماں کی آغوش کو پہلی درس گاہ قرار دے کر اِس پر صداقت کی مہر ثبت کر دی ہے۔ بچے کو اِس عمر میں کسی کتاب یا دیگر علمی ذخیرے کے بغیر براہِ راست آغوشِ مادر سے علم و نور کا فیضان حاصل ہوتاہے۔ اِس حوالے سے والدین، خصوصاً والدہ کی اَوّلین ذمہ داری اِسلامی تعلیمات اور بچوں کی نفسیات کے مطابق اُن کی تربیت کرنا اور انہیں تعلیم دینا ہے۔ والدین کے لیے بچوں کی نفسیات سے متعلق بنیادی اصولوں سے آگاہی نہایت ضروری ہے۔ بچوں کے ذہن کی گتھیاں سلجھانے کے لیے نفسیاتی اُمور سے جان کاری بنیادی ضرورت ہے تقریب کے اختتام پر امت مسلمہ کی سربلندی اور ملک پاکستان کے لیے خصوصی دعائیں مانگی گئی۔