سویڈن میں پاکستانی کمیونٹی کا سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مجرمان کو سزا دینے کا مطالبہ

اردونامہ ویب ڈیسک (انصر اقبال بسرا سٹاک ہوم سویڈن) منہاج القرآن انٹرنیشنل سٹاک ہوم سویڈن کے زیراہتمام منہاج کلچرل سنٹر فتیجا میں شہداء سانحہ ماڈل ٹاون کی یاد میں ایک تعزیتی ریفرنس اور فاتحہ خوانی کا اہتمام کیا جس میں پاکستانی کمیونٹی کی سیاسی، سماجی، مذہبی شخصیات اور منہاج القرآن کے کارکنانان نے بھرپور شرکت کی۔ مقررین نے سانحہ ماڈل ٹاون کے شہداء کی قربانیوں کو زبردست الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا اور نہ صرف ذمہ داران کو کیفر کردار تک پہنچانے کا مطالبہ کیا بلکہ پاکستان کے ادراروں سے مطالبہ بھی کیا کہ سانحہ ماڈل ٹاون کے قاتلوں کو فوری گرفتار کیا جائے اور انکو پھانسی پر لٹکایا جائے جبکہ ان پس پردہ قوتوں کو بے نقاب کیا جائے جو آٹھ سال سے سانحہ ماڈل ٹاون کے لواحقین کو انصاف فرام کرنے میں حائل ہیں اور قاتلوں کو پھانسی پر لٹکانے کی بجائے اُلٹا نواز رہی ہیں اور مجرموں کی پشت پناہی کررہی ہیں۔

سانحہ ماڈل ٹاون پر انصاف نہ ہونا پاکستان کے انصاف فراہم کرنے والے ادراروں پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کیمونٹی کے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ آٹھ سال قبل قاتل حکمرانوں نے ریاستی دہشت گردی کے زریعے بے گناہ اورمعصوم شہریوں کا قتل عام کیا، مگر آج آٹھ سال گزرنے کے بعد بھی ماڈل ٹاؤن کے مظلوم دربدر دھکے کھانے پر مجبور ہیں۔ ہم نے پاکستان کی ہر ایک عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا مگر ایسا لگتا ہے کہ شہداء ماڈل ٹاؤن کیلئے اس ملک میں انصاف کے دروازے بند ہوچکے ہیں۔ آج تک کسی ایک کانسٹیبل تک کو معطل نہیں کیا گیا بلکہ بہت سارے ملزمان کو ترقیاں دے کر اعلیٰ عہدوں پر فائز کردیا گیا۔ تعزیتی ریفرنس کے اختتام پر شہداء سانحہ ماڈل ٹاؤن اور ملک پاکستان کے لیے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔