209

ملک کی خیر۔۔۔بادشاہ سلامت رہے

شو کت تر ین کیا۔؟ تحر یک ا نصا ف کے ا یک ا یک عہد ید ار ا و ر کا ر کن کی سو چ ،فکر،مشن ،مقصدا و ر نظر یہ ہی یہی ہے کہ حضو ر ا و ر حضو ر کے شو ق سلا مت ر ہے با قی شہر ا و ر بہت ۔ ان کے د لو ں میں فطو ر ا و ر سیا ہ کر تو ت ا یسے نہ ہو تے تو محض سا ڑ ھے تین چا ر سا لو ں میں ملک کا ا س طر ح کبا ڑ ہ ہو تا ۔؟ جو لو گ سمجھتے ہیں کہ ملک کو ا س مقا م تک پہنچا نے میں کپتان اور کپتا ن کے کھلا ڑ یو ں کا کو ئی ہا تھ نہیں و ہ ا پنے شو کت تر ین کا کچھ قر یب سے ا یک با ر د ید ا رکر لیں۔ با ئیس کر و ڑ عو ا م کہہ ر ہے ہیں کہ با د شا ہو ں کے شو ق ایک نہیں ہز ا ر ا و ر لا کھ با ر ہو ا میں ا ڑ ے ا و ر آ گ میں جلے پر ملک سلا مت ر ہے لیکن تبد یلی کی کو کھ سے جنم لینے و ا لے یہ نمو نے فر ما رہے ہیں کہ ملک کا بیڑ ہ غر ق ہو تا ہے یا ستیا نا س۔۔ پر۔۔ با د شا ہ کا شو ق سلا مت ر ہنا چا ہیئے۔ ہم کہتے ہیں کہ گید ڑ کی طر ح لیڈ ر بھی کبھی نا گز یر نہیں ہو تے۔ یہ آ ج ہیں تو کل نہیں ہو نگے۔عمر ا ن خا ن سے پہلے ا س ملک میں کتنے لیڈ ر آ ئے ا و ر گئے لیکن یہ نا د ا ن ا س حقیقت کے با و جو د ملک سے ز یا د ہ کپتا ن کو نا گز یز قر ا ر د ے ر ہے ہیں۔یہ کہتے ہیں ملک ہو یا نہ،با ئیس کر و ڑ عو ا م ہو یا نہ،لیکن عمر ا ن خا ن ہر صو ر ت تخت نشین ہو ناچا ہیئے۔عقل کے ا ن کو ر و ں کو کو ئی یہ بتا ئے تو سہی با د شا ہ کے شو ق تو تب سلا مت ر ہیں گے جب یہ ملک ہو گاا و ر ا س میں عو ا م ہو ں گے۔

ا للہ نہ کر ے ا گر ا س ملک کو کچھ ہو ا تو پھر عمر ا ن خا ن کے ہو نے یا نہ ہو نے سے کیا ہو گا ۔؟ہم ا گر ہیں تو ا س ملک کی و جہ سے ہیں ا س ملک کے بغیر تو ہم کچھ بھی نہیں۔شو کت تر ین جیسے نمو نے ا س ملک کی جس طر ح جڑ یں کا ٹ ر ہے ہیں ۔و ا للہ۔ا قتد ا ر ا و ر کر سی کے ا یسے پجا ر یو ں کے ہو تے ہو ئے ہمیں با ہر سے کسی د شمن کی کو ئی ضر و ر ت نہیں۔ آ ستین کے سا نپ ایسو ں کو ہی تو کہتے ہیں ۔ا س ملک میںآ ستین کے ا صل سا نپ ہی د ر حقیقت شو کت تر ین جیسے یہی لو گ ہیں جو ا س ملک میں ر ہ کر ملک کی جڑ یں کا ٹ ر ہے ہیں۔ یہ صا حب ملک کے و ز یر خز ا نہ ر ہے ہیں۔ا ن کے نز د یک ملک ا و ر ر یا ست بعد میں ہے ا و ر خا ن صا حب پہلے۔ یہ فر ما تے ہیں کہ ر یا ست کا نقصا ن ہو تا ہے تو بے شک ہو لیکن با د شا ہ کا شو ق ا د ھو ر ا نہیں ر ہنا چا ہیئے۔ا ب آ پ خو د ا ند ا ز ہ لگا ئیں کہ بطو ر و ز یر خز ا نہ ا س نے با د شا ہ کے شو ق سلا مت ر کھنے کے لئے پہلے ملک کو کتنا نقصا ن پہنچا یا ہو گا ۔؟ملک کپتا ن ا و ر ا ن کے ا ن نمو نو ں کی و جہ سے تبا ہی کے د ہا نے پرپہنچا ۔شو کت تر ین جیسے و ز یر و ں ا و ر مشیر و ں نے سا ڑ ھے تین سا ل میں ملک سے معیشت کا جنا ز ہ نکا ل د یا ۔جو ملک نو ا ز شر یف کی محنت ا و ر کو ششو ں سے ا چھا بھلا ترقی کی ر ا ہ پر گا مز ن ہو گیا تھا ا ن نمو نو ں نے ا پنی پہلی و ار ی میں ا س کا ا یسا حا ل کر د یا کہ آ ج بھی ملک کی ا س حا لت کو د یکھ کر ا فسو س ہو تا ہے مگرکپتا ن کے ا ن ا ند ھے مقلد و ں کو ا پنے ا ن گنا ہو ں ا و ر جر ا ئم کی کو ئی پر و ا ہ ہے ا و ر نہ ا ن پر ذ ر ہ بھر کو ئی شر مند گی۔چا ہیئے تو یہ تھا کہ ملک کو ا نہو ں نے جس د لد ل میں د ھکیلا تھا ا س د لد ل سے نکا لنے کے لئے یہ شہبا ز حکو مت کا سا تھ د یتے لیکن یہ تو ا ب ا و ر آ ج بھی ملک کو مز ید ڈ بو نے کی کو ششو ں ا و ر سا ز شو ں میں مصر و ف ہیں۔

لگتا ہے کپتا ن کی طر ح ا ن کے کھلا ڑ ی بھی ا قتد ا ر ا و ر کر سی ہا تھ سے جا نے کے بعد ہو ش کھو بیٹھے ہیں و ر نہ ملک کے سا بق و ز یر خز ا نہ ہو کر شو کت تر ین نے پنجا ب ا و ر خیبر پختو نخو ا کے و ز ر ا ئے خز ا نہ کو جو پٹیا ں پڑ ھا ئی ہیں و ہ کو ئی محب و طن نہیں پڑ ھا سکتا ۔ہر شخص چا ہتا ہے کہ ملک کا کچھ بھلا ہو لیکن ا س ملک میں سو نا می نا می یہ ا یک و ا حد مخلو ق ہے جو چا ہتی ہیں کہ ملک ا و ر قو م کا کو ئی بھلا ہو یا نہ۔لیکن ا س کے سیا سی بھگو ا ن یا کپتا ن کا بھلا ضر و ر ہو۔یہ پہلے بھی ملک ا و ر قوم پر کپتا ن کو تر جیح د یتے تھے ا و ر یہ آ ج بھی کپتا ن کو ملک و قو م سے مقد م سمجھتے ہیں۔جس مخلو ق کے ہا ںا یک عا م ا نسا ن کے مقا بلے میں پو ر ے ا یک ملک ا و ر با ئیس کر و ڑ عو ا م کی کو ئی قد ر و قیمت نہ ہو تو ا یسی مخلو ق سے ملک یا قو م کی خیر خو ا ہی کی کیا ا مید با ند ھی جا سکتی ہے۔؟ا ن کی سو چ یہ ہے کہ یہ جمہو ر یت،یہ ا قتد ا ر ا و ر یہ کر سی بس صر ف ا ن ا و ر ا ن کے عظیم کپتا ن کے لئے ہے ا گریہ یا ا ن کے کپتا ن نہیں تو پھر جمہو ر یت،ا قتد ا ر ا و ر کر سی بھی نہیں۔لو گ ر ا ت کی تا ر یکی ا و ر ا ند ھیر ے میں خو ا ب د یکھتے ہیں لیکن کپتا ن کے ا ن تر بیت یا فتہ کھلا ڑ یو ں کی خا صیت یہ ہے کہ یہ د ن کی ر و شنی میں بھی بڑ ے بڑ ے خو ا ب د یکھتے ہیں۔ا پنی سا ڑ ھے تین سا لہ حکمر ا نی میںملک کو معا شی طو ر پرا نہوں نے ا تنا کمز و ر کیا کہ و ہ آ ج بھی ہچکیو ں پرہچکیا ں لے رہاہے۔ قیا مت خیز سیلا ب کا عذ ا ب ا س سے ا لگ ہے۔ا ن حا لا ت میں ہر شخص ملک و قو م کا سو چ ر ہا ہے لیکن ا یک یہ ہیں کہ ا نہیں ا س مشکل ا و ر کڑ ے و قت میں بھی سیا ست ا و ر منا فقت کھیلنے سے فر صت نہیں۔

جیسا کپتا ن ہے و یسے ا ن کو کھلا ڑ ی ملے ہیں۔خا ن کے جن نعر و ں ،د عو ئو ں ،و عد و ں ا و ر سپنو ں پریہ چا ر پا نچ سا ل پہلے نا چتے تھے آ ج بھی یہ ا نہی نعر و ں ا و ر و عد و ں پرا و چھل ا و چھل کر نا چ ر ہے ہیں مگرا ن میں ا تنی عقل نہیں کہ یہ تو د یکھیں کہ بیچ میں جو سا ڑ ھے تین چا ر سا ل خا ن کی حکمر ا نی کے گز ر ے ہیں ا ن سا ڑ ھے تین چا ر سا لو ں میں ا ن نعر و ں،د عو ئو ں،و عد و ں ا و ر سپنو ں کا کیا حشر نشر ہو ا ۔؟کہتے ہیں مو من ا یک سو ر ا خ سے ا یک با ر ڈ سا جا تا ہے معلو م نہیں کپتا ن سے چمٹے یہ کو نسے مو من ہیں جو ایک ہی سو ر ا خ ا و ر ا یک ہی کپتا ن سے با ر با ر ڈ سے جا ر ہے ہیں۔ا نصا ف عا م،ا حتسا ب سر عا م ا و ر ا قتد ا ر میں عو ا م۔یہ کپتا ن ا و ر کپتا ن کی پا ر ٹی کا ا ہم منشو ر تھا ۔کپتا ن کا کو ئی کھلا ڑ ی ہی بتا د یں سا ڑ ھے تین چا ر سا لوں کے ا ند ر ا ن میں سے کسی ا یک پر بھی کو ئی عمل ہو ا ہو ۔کپتا ن کی حکمر ا نی میں ا نصا ف عا م کیا ۔؟ا نصاف تو گمنا م ہی ر ہا ،سر عام ا حتسا ب کے قصے ا و ر کہا نیا ں بھی کتا بو ں سے با ہرنہ آ سکیں،ر ہی ا قتد ا رمیں عو ا م و ا لی با ت۔و ہ بھی عو ا م نے ا پنی آ نکھو ں سے د یکھ لی کہ خا ن کی حکمر ا نی میں عو ا م ا قتد ا ر میں ر ہے یا مہنگا ئی ،غر بت،بیر و ز گا ر ی ا و ر آ گ کے د ر یا میں۔جو شخص ڈ بل ا قتد ا ر ملنے کے با و جو دملک کے ا یک صو بے خیبر پختو نخوا کو ما ڈ ل نہ بنا سکے،جو سا ڑ ھے تین سا ل تک ملک کا حکمر ا ن ر ہ کر کو ئی تا ر یخی کا ر نا مہ سر ا نجام د ینے سے یکسر قاصر ر ہیں ۔ا ب ا یسے شخص سے کیا ا مید ۔۔کہ و ہ د و با ر ہ ا قتد ا ر میں آ کر کو ئی تیر ما ر لیں گے۔ ؟کپتا ن کے و ہ و ز یر خز ا نہ جن سے کل تک لو گ ملک کی معا شی تر قی کی ا مید یں با ند ھتے تھے کیا آ ڈ یو لیک کے بعد ا ب کپتا ن کے ا س ا یما ند ا ر ا و ر و فا د ا ر کھلا ڑ ی سے بھی خیر کی کو ئی تو قع کی جا سکتی ہے۔۔؟ کپتا ن ہیں یا کھلا ڑ ی ،یہ سب ا یک د و سر ے سے ا یک نہیں پو ر ے سو سو قد م آ گے ہیں۔ا یسے نمو نو ں کے شر سے ا للہ ا س ملک ا و ر قو م کو بچا ئے و ر نہ ا ن کے عز ا ئم سے لگ رہا ہے کہ ا پنی ذ ا ت ا و ر مفا د کے لئے قو م کیا۔؟یہ ا س ملک کو بھی د ا ئو پر لگا نے سے د ر یغ نہیں کر ینگے۔